Humanity…

اجی قوم کےابا ذرا سنتے ہو۔۔۔۔۔۔۔ اچھا مصروف ہیں۔۔۔۔ چلیں قوم کو ہی سنا دیتی ہوں۔
ایک بات ذہن میں آئی اور وہ یہ کہ الله کے موجود ہونےکے احساس سے بھی زیادہ خوبصورت ایک اور احساس ہوتاہے۔ ذرا بتائیں کون سا۔۔۔۔ نہیں پتہ۔۔۔۔ چلیں شرمندہ نہ ہوں میں بتائے دیتی ہوں۔۔۔۔۔۔۔ وہ ہے الله کے ایک لمحے بھی غافل نہ ہونے کا احساس۔۔۔ سچ کہہ رہی ہوں۔۔۔۔ دل کو تسلی رہتی ہے کہ کوئی ہروقت دیکھہ بھال کررہا ہے۔ لیکن یہ خیال بھی رہتا ہے کہ کہیں میںخودغافل نہ ہو جاؤں۔  سورہ البقرہ میں یہی کہا ہے نا الله سبحانہ و تعالی نے کہ۔۔۔۔  تم مجھے یاد کرو میں تمہیں یادکروں گا۔۔۔۔۔
ایک بات اور بھی ہے۔ یہ انسانیت اور انسانیت کے لئے کام کرنے کا مطلب سمجھہ نہیں آیا۔ جو انسانیت کے لئے کھڑا ہوتا ہے جانوروں کو اہمیت دینے لگتا ہے۔ میں نے خود دیکھا ہے۔ اپنے بچے دور الگ کمرے میں سلائیں گے۔ کتا بلی ساتھہ سوئیں گے۔ آپس میں ایکدوسرے کا جھو ٹا نہ کھا ئیں گے نہ پئیں گے۔ کتے بلیوں کے منہ کا کھا پی لیں گے۔ یہ کیسی انسانیت ہے جو انسانوں سےدورکردیتی ہے۔ انسانوں کے مقابلے پہ جانوروں کو افضل بنا دیتی ہے۔ حالانکہ انسانوں کو اشرف المخلوقات بنایا گیا ہے۔ باقی تمام چیزیں انسانوں کے لئے پیدا کی گئی ہیں۔

اچھا ایک اور بات ہےاور نہایت ہی عجیب بات ہے۔۔۔۔۔۔ بچپن سے سنتی آرہی ہوں۔۔۔ یہ لوگ جوخودکو غیر دینی لیبل کرتے ہیں اور زوروشور کے ساتھہ یہ منطق فخریہ بیان کرتےہیں کہ جی بس قرآن کافی ہے۔ باقی سب مولویوں کی گھڑی ہوئی باتیں ہیں۔ رسول کاتعلق تو چودسو سال پہلے کے زمانے سے تھا۔ آج کے دور میں آج کے حساب سے زندگی گذارنی چاہئے۔۔۔۔۔۔ قسم سے جب یہ سب کچھہ کہہ رہے ہوتے ہیں نا بالکل مولویوں والا لہجہ ہوتا ہے کرخت۔ حالانکہ خود مولویوں کے اسٹائل پر تنقید کرتے ہیں۔۔۔۔ خیر۔۔۔۔ یوں تو رسول سنت حدیث کا ذکر بھی گوارا نہیں لیکن ایک حدیث ایسی ہےجو انکو ماں کی گود سے لے کر قبر تک یاد رہتی ہے۔ اور اس ایک حدیث کے بل سارے کے سارے قرآنی احکامات کو پیچھے پھینک دیتے ہیں۔۔۔ نماز روزہ زکوات حج پردہ سب فضولیات اور شراب زنا مستیاں سب حلال۔۔۔۔۔  کیاچکربازی ہے واہ ۔۔۔۔ اب یہ پتہ نہیں کہ انسانی دماغ کا کمال ہے یا شیطانی دماغ کا۔۔۔۔۔۔ پہلی بات تو یہ کہ آخر یہی حدیث کیوں آج کے دور میں فٹ ہوتی ہے باقی کیوں نہیں اور اگرباقی احادیث ضعیف ہیں تو اس حدیث کے جوان رہنے کاکیاراز ہے۔ کیا پتہ کب کسی زمانے کے موڈریٹ نے یہ حدیث گھڑ لی ہو۔

وہ حدیث ہے کیا۔۔۔۔ کہ الله اپنے حقوق معاف کردیگا لیکن بندوں کے حقوق معاف نہیں کریگا ۔۔۔۔۔۔ چلو جی چھٹی ہوئی۔ سارا کا سارا الزام رسول کے سرپر۔ جو دل میں آئے کرو۔ موج  ہی موج۔
چلیں جی۔ میں بغیر کسی بحث کےیہ سب درست مان لیتی ہوں۔ چلیں چھوڑیں الله کی پرواہ۔۔۔ اور جب الله کے حقوق معاف ہی ہو جانے ہیں تو قرآن کا بھلا کیا حق باقی رہ گیا۔ اسکے پڑھنے پڑھانے سے بھی چھٹی۔ احادیث اور سنت تو ضعیف ہیں لہذا ان سے بھی جان چھوٹی۔ اب لے دے کے رہ گئی یہ حدیث۔ چلیں اسی سے دنیا اور آخرت کا کام نکالنے کی کوشش کرتے ہیں۔۔۔۔۔۔ تو بات صرف رہ گئی انسانوں کے حقوق یعنی انسانیت کی۔۔۔۔۔۔ واہ جی واہ بڑا رتبہ ہے انسان کا۔۔۔۔۔  ذرا بتائیےگا اس ایک مبارک حدیث کے بل پر کتنے انسانوں کے حقوق پورے کر دئیے۔  ماں باپ بھائی بہن نند بھابھی ساس بہو سسر داماد پڑوسی رشتہ دار دوست مسافر کولیگز مریض استاد شاگرد ۔۔۔۔۔۔۔ سارے ہی انسانی رشتے ہیں۔ کس کس کو خوشیاں بانٹ دیں۔ کس کس کو اسکا حق پہنچا دیا۔ کبھی سوچا کہ کون کون مجھہ سے خوش ہے۔ اور نہیں تو کیوں نہیں۔  کبھی یہ سوچا کہ اگر تو واقعی سب اس حدیث پر ایمان رکھتے اور عمل کرتے ہوتے تو دنیا کا یہ حشر ہوتا۔ یہ کون سی انسانیت ہے کہ انسان انسان سے بیزار اور خوفزدہ ہے۔
حالانکہ نانی امی کہتی تھیں انسان انسان کی دوا ہے۔

What happened?  Nothing, just the same topic ‘humanity’.  We human beings are driving very fast.  Driving what?…driving everyone crazy.  It’s time to hit the breaks because we have broken too many human laws and we are keep violating them.  That’s not good.  God doesn’t like it.  Nature doesn’t approve it.  We are keep ignoring God, His laws, His Prophets, His blessings.  This is no good man.  Need to stop and think what we are doing.

About Rubik
I'm Be-Positive. Life is like tea; hot, cold or spicy. I enjoy every sip of it. I love listening to the rhythm of my heart, that's the best

One Response to Humanity…

  1. Hibah Naz says:

    This makes so much sense.
    I mean why Separate God’s rights and humans?
    God Himself has said to take care of His creation.
    I have nothing more to say. EXCELLENT!

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: