Little Talk

آج تک ملک چھوڑ کر جانے یا ملک سے بھاگنے والے جتنے تارکین وطن سے بات ہوئی سب نے تقریبا ایک جیسی ہی وجوہات بیان کیں۔۔۔ اور وہ یہ کہ پاکستان میں روزمرہ کی زندگی عذاب ہے۔۔۔ چھوٹی چھوٹی باتیں اور چیزیں تکلیف دیتی ہیں۔۔۔ روزانہ جن لوگوں سے واسطہ پڑتا ہے وہ جھوٹے دھوکہ باز اور منافق ہیں۔۔۔ گندگی مکھیاں مچھر بیماریاں۔۔۔ تعلیمی نظام کوئی نہیں۔۔۔ کرپشن عام۔۔۔ بجلی پانی کی تکلیف۔۔۔ علاج مہنگا۔۔۔ نفرتیں تعصب۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
مگر باہر ملکوں میں چار گناہ کبیرہ یعنی سور شراب زنا اور بے حیائی عام ہیں۔۔۔ وہاں آپکی نسلیں ان گناہوں میں مبتلا ہو سکتی ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
دیکھیں یہ انکا اپنا معاملہ ہے۔۔۔ کم از کم ہمیں تو کچھہ نہیں کہتے نہ۔۔۔۔ اور ویسے بھی یہ چیزیں تو ہر جگہ عام ہیں اب کہاں تک ان سے بچیں گے۔۔۔ اور ہدایت دینا الله کا کام ہے کہیں بھی دے سکتا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

پہلی بات تو یہ کہ چھوٹی چھوٹی چیزوں اور باتوں کے بھی دل ہوتے ہیں۔۔۔ جب ان پر توجہ نہیں دیں گے تو وہ تکلیف ہی دیں گی کیونکہ نظرانداز ہونا کسی کو بھی اچھا نہیں لگتا۔۔۔

باہر ملکوں میں چھوٹی چھوٹی چیزوں اور باتوں کوبلکہ چھو ٹےلوگوں تک کو اہمیت دیتے ہیں اس لئے وہاں روز مرہ کی زندگی پر امن ہے۔۔۔ جبکہ ہمارے ہاں کبھی کبھار بھی واسطہ پڑے تو لوگ اسطرح معصومیت سے ادھر ادھر دیکھتے ہیں جیسے سامنے کوئی ہے ہی نہیں۔۔۔ دل کرتاہے اس کے کان پکڑ کے اسکا سر جھکاؤں اور کہوں خاتون فٹے منہ آپکا۔۔۔ انگریزوں سے جینز پہننی سیکھہ لی شراب پینا سیکھہ لی۔۔۔ تھوڑی تمیز اور انسانیت بھی سیکھہ لی ہوتی۔۔۔ صرف ادائیں دکھانےاور غیر اسلامی یا حرام حرکتیں کرنے سے انسان تہذیب یافتہ نہیں کہلاتا۔۔۔  بلکہ کوا لگنے لگتا ہے جو ہنس کی نقل میں اپنی اصل بھول گیا ہو۔۔۔ اور اصل یہ ہے کہ انسان جتنا اوپر چلا جائے آخر میں دفن ہونے کے لئے زمین پر ہی آنا پڑتا ہے۔۔۔ اور دفن ہوا شخص تو بادشاہ بھی ہو تو زمین پر چلنے والوں کے قدموں کے نیچے ہوتا ہے چاہے وہ فقیر ہی ہوں۔۔۔
اور پھر یہی رویہ تو نفرتوں تعصب اور سماجی برائیوں کی جڑ ہے اور پاکستان کی فضاؤں میں نحوست کی سب سے بڑی وجہ۔۔۔
دوسری بات یہ کہ روز مرہ زندگی میں ہم ملتے کس سے ہیں۔۔۔ صدر وزیراعظم یا سیاستدانوں سے اجنبیوں سے غیر ملکیوں سے۔۔۔۔۔۔۔ یقینا اپنے جیسےعام لوگوں سے۔۔۔ جن سے ہماری جان پہچان ہوتی ہے رشتہ داریاں ہوں۔۔۔ ان سے ہی ہم روزمرہ معاملات کرتے ہیں تو پھر عذاب تو عام لوگوں نے ہی کی ہے عام لوگوں کی زندگی۔۔۔ عام لوگوں کے رویے اچھے ہونگےتو عام حالات بھی کافی حد تک اچھے ہو جائیں گے۔۔۔
تعلیمی نظام کا بیڑہ غرق بھی اسی لئے ہوا ہے کہ عام لوگوں نے غیر معیاری تعلیم کو پسند کرنا شروع کردیا۔۔۔۔۔۔۔ آکسفورڈ کی کتابوں اور او لیولز میں کیا معیار ہے۔۔۔ اسی لئے طلبہ حواس باختہ ہائے ہوئی کرتے نظر آتے ہیں۔۔۔ ہائے الله اتنا پڑھنا ہے۔۔۔ ہائے پیپرز شروع ہونے والے ہیں۔۔۔ ہائے اتنا ہوم ورک۔۔۔ اتنی ہائے ہائے بھی نحوست ہوتی ہے۔۔۔ پڑھنا ہی ہے تو خوشی سے پڑھ لو۔۔۔
زیادہ سے زیادہ ہاسپٹلز کا مطالبہ یا حسرت ذہنی اور جسمانی طور پر بیمار ہونے کی علامت ہے۔۔۔ مہنگے علاج کو کیا رونا۔۔۔ گھروں اور گلیوں کو صاف رکھیں آدھی بیماریاں ختم ہو جائیں گی۔۔۔ کچھہ شوہروں کو چکر دینے کےلئے جو جھوٹ موٹ سر پر پٹیاں باندھی جاتی ہیں وہ ختم کی جائیں۔۔۔ مردہ جانور کھانے اور کھلانے سے, شراب اور دوسری حرام چیزوں سے خود اپنے نفس کو روکیں اور خواہ مخواہ ان کو حلال کرنے کے لئے  قرآن اورحدیث کو کرپٹ یا نظرانداز نہ کریں۔۔۔ یہ بھی نحوست ہے۔۔۔ اور سب سے واہیات کرپشن بھی۔۔۔۔
اور ویسے بھی کبیرہ گناہوں کو عام کرنا پر امن معاشرے کی علامت نہیں۔۔۔ ورنہ جو غلاظت رشتوں کی باہر ملکوں میں ہے وہ انسانیت کو شرمندہ کرنے کے لئے کافی ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اور جو وہ آپکوکچھہ نہیں کہہ رہے تو وہ اس لئے کہ ان کاموڈ نہیں ہو گا ورنہ عافیہ صدیقی کو وہ بہت کچھہ کہہ چکے۔۔۔
رہا بجلی پانی کا قصہ تو ان دونوں کو ضائع نہ کریں اور انکو استعمال کرنے والوں کی تعداد میں دن دوگنا رات چوگنا اضافہ نہ کریں۔۔۔
ملک چھوڑ کر جانے والوں کی خیرہو کیونکہ باہر رہ کربھی وہ پاکستان کی فکر کرتے ہیں۔۔۔ اپنے لوگوں کی مدد کرتے ہیں اور کسی نہ کسی طور پاکستان کے لئے آواز اٹھاتے رہتے ہیں۔۔۔۔۔۔۔
لیکن جو ملک چھوڑکر بھاگے۔۔۔ اور اس حرکت پر شرمندگی کے بجائے فخر کرے کہ پاکستان سے جان چھوٹی۔۔۔ اور جسٹفائے کرے بہانوں سے۔۔۔ اور  پھر توقع رکھتے ہیں کہ انھیں اہمیت دی جائے۔۔۔ ایسوں کےلئے کہا جانا چاہیے ۔۔۔ خس کم پاکستان پاک۔۔۔ یاپھر۔۔۔۔۔۔ نہ گھر کا نہ گھاٹ کا۔۔۔۔ یہ بھی نحو ست ہے لیکن شکر ہے ایسے لوگ اپنی نحوست باہر لے جاتے ہیں۔۔۔ ایسوں سے نہ دوستی اچھی نہ دشمنی۔۔۔ بلکہ نظرانداز کرنا چاہیے۔۔۔
پاکستان زندہ باد۔۔۔ پاکستانی پائندہ باد

About Rubik
I'm Be-Positive. Life is like tea; hot, cold or spicy. I enjoy every sip of it. I love listening to the rhythm of my heart, that's the best

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: