Milad Celebrations

کی محمد سے وفا تو نے تو ہم تیرے ہیں

یہ جہاں چیز ہے کیا, لوح وقلم تیرے ہیں

So, if I would be given the pen and the tablet, I would write HONOUR and MERCY for all those who stand for justice and help those who are being oppressed.  May Allah (SWT) help Kashmiris and Palestinians get freedom from their oppressors.  Ameen!

Pakistanis having 12th of Rabi-ul-Awwal and Kashmir Day on the same day, are celebrating the birth of Prophet Muhammad (pbuh) which he never celebrated himself, neither his family and companions ever partied the day like we do.

Can these celebrations resolve the Kashmir dispute?  Can these celebrations reduce the prices of electricity, gas and sugar?  Can these celebrations be the source of income for anyone else beside professional na’at reciters, milad organizers and confectioners?  Do these celebrations promise a respectful life and a better future for women and children on streets?  Can these celebrations be a threat to corruption and crimes in Pakistan?  Hundreds of children and women have been abducted from Data Darbar and other saint’s tombs – even Data and other saints had failed in protecting them from kidnappers and saving their dignity.  Drugs are sold at these places – again the saints in their graves have failed in controlling drug and curing drug addicts.  Then what is the point of celebrating milad at Data Darbar – ARY people should think about it.  Do the organizers, scholars and attendees there know about these problems?

What is the difference between Christian’s confession before father or priest and Milad celebrations while both cost money for wiping sins – more sins, more confessions and more income – good business?

Don’t Pakistani Muslims realize that the world does not trust us?  The world see us as sinners – liar, cheater, dishonest, traitor, irresponsible, careless, illiterate, unjust, torturers, rapist, disrespectful, comedians – and we haven’t proved that we are not.

کیا کہیں کوئی روایت ملتی ہے کہ رسول الله صلی الله علیہ وسلم کو کبھی ساری رات بیٹھہ کر صحابیوں سے اپنے لئے قصیدے سنتے دیکھا گیا ہو۔۔۔ یا خود رسول الله صلی الله علیہ وسلم نے گھنٹوں بیٹھہ کر صحابیوں کو پہلے نبیوں کے قصے سنائے ہوں۔۔۔ 

کیا بارہ ربیع الاول رسول الله صلی الله علیہ وسلم کے زمانے میں نہیں آئی۔۔۔ کیا اہل بیت اور اصحابہ کرام کو بارہ ربیع الاول کی اہمیت کا اندازہ نہیں تھا۔۔۔ یا جنوبی ایشیا کے مسلمان علم, عقل اور ایمان میں اہل بیت اور اصحابہ کرام سے زیادہ ہیں۔۔۔ 

بجلی کے بحران سے تباہ شدہ ملک میں بارہ دن سے بجلی کے بلبوں سے چراغاں ہورہاہے۔۔۔ کتنے ہزار یونٹس بجلی خرچ ہو چکی ہے۔۔۔ تعلیمی اداروں کی بجلی کٹ رہی ہے, فیکٹریاں بند پڑی ہیں, بجلی کی قیمتیں بڑھ رہی ہیں۔۔۔ کیامسلمانوں کا معاشرہ اتنا لاتعلق ہوتا ہے اپنی معیشت سے, اپنے مسائل سے۔۔۔

ملک میں پچھلے کئی سال سے چینی کابحران ہے۔۔۔ چینی کی قیمتیں دگنی ہوگئیں۔۔۔ کچھہ اندازہ ہے گنے کی فصلوں کا کیا حال ہے, کتنے سو ٹن چینی کی مٹھائی بٹ چکی ہے میلادوں میں۔۔۔ کیا اتنا میٹھا کھانا ضروری ہے ربیع الاول میں۔۔۔ 

بارہ ربیع الاول کا احترام اپنی جگہ۔۔۔ اسکے آخرت میں ثواب کا معاملہ اپنی جگہ۔۔۔ رسول الله صلی الله علیہ وسلم سے محبت اور عقیدت میلاد  اور نعتوں سے مشروط نہیں۔۔۔  رائیونڈ کے اجتماع, درس قرآن, قرآن خوانیاں, میلاد۔۔۔ اتنے سالوں میں اس خطے کے چالیس پچاس کروڑ مسلمانوں نے دنیا کو کیا دیا۔۔۔ خود کو کیا دیا۔۔۔ 

کیا رسول الله صلی الله علیہ وسلم کی زندگی کا مقصد مسکینیت, ماتم, سوگ, من چاہی رسومات, مولوی کی اطاعت, دنیا سے بے خبری, غیر ذمہ داری, گندگی, بدنظامی, بھیک مانگنا تھا۔۔۔ اگر ایسا تھا تو اس کے لئے رسول الله صلی الله علیہ وسلم کو کچھہ کرنے کی ضرورت نہیں تھی اور نہ ہی الله سبحانہ وتعالی کو کوئی نظام دینے کی۔۔۔ کیونکہ مسکینیت, ماتم, سوگ, من چاہی رسومات, مولوی کی اطاعت, دنیا سے بے خبری, غیر ذمہ داری, گندگی, بھیک, بدنظامی تو عربوں میں پہلے سے موجود تھیں۔۔۔ 

شاید بہت ساری غفلتوں کا احساس دلانے کے لئے اس سال بارہ ربیع الاول اور یوم کشمیر ایک ہی دن پڑے ہیں۔۔۔

ایک میرا ہی رحمت پہ دعوی نہیں

شاہ کی ساری امت پہ لاکھوں سلام

  Just imagine, if Prophet Muhammad (pbuh) really gets a chance of visiting Pakistan tonight, would he join the na’at and milad mehfils and enjoy his praises or would he cry for men, women and children spending the night on streets, some hungry, others may be sick,  no sanctuary in mosques for women while they are being raped on the streets – and who would he call true ashiqan-e-rasool, those who are guarding the borders of Islamic Republic of Pakistan or those who are busy hitting jack-pot on the night of Milad-un-Nabi?

QASEEDAH BURDA SHAREEF

About Rubik
I'm Be-Positive. Life is like tea; hot, cold or spicy. I enjoy every sip of it. I love listening to the rhythm of my heart, that's the best

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: