اَبٌ اَخٌ حَمٌ دَمٌ غَدٌ یَدٌ

.


اَبٌ  اَخٌ  حَمٌ  دَمٌ  غَدٌ  یَدٌ — ان اسماء کا اصل مادّہ پہلا لفظ ہیں … انکی تنوین کھولیں، اور اجوف کے قاعدہ نمبر ٢ کے تحت حرکت ما قبل کو منتقل کردیں… پھر اجوف کے قاعدہ نمبر ٣ کے تحت ‘ و ‘ گرا دیں… تو آخری لفظ بنتا ہے اور یہی بولا جاتا ہے…
.
اَبْوٌ    >  اَبْوُنْ    >  اَبُوْنْ    >  اَبُنْ    >  اَبٌ  – باپ 
اَخْوٌ  >  اَخْوُنْ   >  اَخُوْنْ   >  اَخُنْ  >  اَخٌ   – بھائی 
دَمْیٌ  >  دَمْیُنْ   >   دَمُیْنْ   >   دَمُنٌ  >   دَمٌ  – خون 
حَمْوٌ  >  حَمْوُنْ >   حَمُوْنْ >   حَمُنْ >  حَمٌ  – سسر  
ھَنْوٌ    >  هَنْوُنْ  >   هَنُوُنْ   >   هَنُنْ   >  هَنٌ – بہت چھوٹی سی چیز 
.
غَدٌ  – آنے والی کل 
.
فَمٌ  معنی منہ کے لئے فَوٌ بھی استعمال ہوتا ہے … فَمٌ   فَمًا   فَمٍ 
.

ذُو معنی  صاحب یا اہل – یہ اسم ہے لیکن اسم سے ہی پہلے آتا ہے اور اسے مجرور کرتا ہے  
ذُوالْجَلَالِ  ذُوالْحِجَّةِ  ذُوالْعَرْشِ  ذُوالْقَرْنَیْنِ  ذُوالْقَعْدَةِ   ذُوالْکِفْلِ  ذُوالنُّورَیْنِ 
.
.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s

%d bloggers like this: